وزیر اعظم عمران خان نے وزیرستان کے لئے3 جی اور 4 جی سروس کا اعلان کر دیا

وانا: وزیر اعظم عمران خان نے بدھ کے روز اعلان کیا ہے کہ آج سے وزیرستان میں تھری جی اور فور جی خدمات دستیاب ہوں گی۔

وزیر اعظم عمران نے وانا میں کمیاب جوان پروگرام کے چیک تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیرستان کے عوام کے ساتھ یہ خبر شیئر کی۔

ہم آپ کے مسائل حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ آج سے تھری جی اور فور جی خدمات کارآمد ہوجائیں گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ علاقہ کے نوجوانوں کا مطالبہ ہے کہ تھری جی اور فور جی خدمات علاقے میں پھیلائیں۔

وزیر اعظم نے بتایا کہ اس سے قبل خطے میں تھری جی اور فور جی خدمات دستیاب نہیں تھیں کیونکہ حکومت کو خدشہ ہے کہ اسے دہشت گردی کے لئے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ انہوں نے آرمی قیادت سے اس معاملے کے بارے میں بات کی اور مجھے بتایا گیا کہ یہ علاقے کے نوجوانوں کی ضرورت ہے۔

وزیر اعظم عمران نے کہا ، “میں نے فوج سے بات کی اور ہم نے فیصلہ کیا کہ ہم یہ سہولت فراہم کریں گے۔”

وزیر اعظم نے لوگوں کو یقین دلایا کہ حکومت علاقے کے لوگوں کے لئے مزید اسکالرشپ بھی مختص کرے گی

وزیر اعظم عمران نے لوگوں کو بتایا کہ وہ اس علاقے میں زیتون کا انقلاب لائیں گے ، کیونکہ عام طور پر ان علاقوں میں پیداوار کی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ زیتون علاقے میں بہت پیسہ لائے گا۔ انہوں نے یہ بھی اعلان کیا کہ پانی کی پریشانیوں کے حل کے لئے علاقے میں ایک ڈیم تعمیر کیا جائے گا۔

وزیر اعظم نے لوگوں کو یقین دلایا کہ ان کی حکومت قبائلی اضلاع سمیت معاشرے کے ناقص طبقات اور پسماندہ علاقوں کی ترقی پر کام کرے گی۔

وزیر اعظم عمران نے کہا ، “قبائلی اضلاع کے عوام کو تعلیم کے شعبے اور روزگار کی فراہمی پر خصوصی زور دیا جائے گا۔” وزیر اعظم نے لوگوں کو یہ یقین دہانی بھی کرائی کہ حکومت اسکالرشپ کے علاوہ قبائلی اضلاع میں اسکول ، کالج ، یونیورسٹیاں اور تکنیکی انسٹی ٹیوٹ بھی بنائے گی۔

عمران خان نے کہا کہ کمیاب جوان پروگرام کے تحت قرضے صرف آغاز ہیں اور اس کے دائرہ کار میں مزید توسیع کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اگلے سال سے اس پروگرام میں مزید فنڈز ڈالے جائیں گے تاکہ لوگوں کو مزید قرضے دیئے جاسکیں۔

وزیر اعظم نے کہا کہ احسان پروگرام کے تحت قبائلی عوام کو بھی امداد فراہم کی جائے گی۔

قبل ازیں وزیر اعظم عمران خان نے کمیاب جوان پروگرام کے تحت نوجوانوں میں چیک تقسیم کیے۔

وزیر اعظم کے ہمراہ وزیر اعلی اور خیبر پختونخوا کے گورنر بھی تھے۔

بعدازاں وزیر اعظم کو خطے میں جاری ترقیاتی کاموں کے بارے میں بریفنگ دی جائے گی۔

قبائلی علاقے کے دورے کے موقع پر معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر ، عثمان ڈار ، اور شہباز گل بھی وزیر اعظم کے ساتھ ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں